SS HEADMASTER/HEADMISTRESS JOBS IN PUNJAB 2015 output_ehG634 CTI JOBS IN PUNJAB cti jOBS

ٹیسٹ میں بہترین کارکردگی کے آسان طریقے MCQS

ٹیسٹ میں بہترین کارکردگی کے آسان طریقے MCQS

ایک ماہر ریاضیات و شماریات ویلیم پاﺅنڈسٹون کا کہنا ہے کہ اس نے شماریات کو مد نظر رکھتے ہوئے ایسے اصول وضع کئے ہیں جن پر عمل کرکے آپ کسی بھی قسم کے ایم سی کیو ٹیسٹ کو انتہائی آسانی کے ساتھ حل کرسکتے ہیں۔اس کا کہنا ہے کہ اس نے 100مختلف شعبوں سے تعلق رکھنے والے ٹیسٹوں میں 2456سوالات کو حل کیا ۔ان شعبوں میں مڈل سکول، ہائی سکول، کالج، یونیورسٹی، میڈیکل، انجینئرنگ اور دیگر شامل تھے اور دلچسپ بات یہ ہے کہ تمام ٹیسٹوں کو شماریاتی اصول کو سامنے رکھ کر حل کرنا آسان ہے۔
ان باتوں کے پیش نظر ویلیم پاﺅنڈسٹون نے ایم سی کیو حل کرنے کے چند آسان طریقے بتائے ہیں۔ آئیے دیکھتے ہیں کہ وہ طریقے کون سے ہیں۔
روایتی باتوں سے کنارہ کریں
آپ کو اکثر مشورہ دیا جاتا ہوگا کہ چار جوابات میں سے درمیان والے پر نشان لگانا ،یہ بھی کہا جاتا ہے کہ ایسے جوابات جن میں ’اوپر والوں میں سے کوئی نہیں‘یا ’تمام اوپر کے جوابات‘والی آپشن کو ہر گز نہ ٹک کرے لیکن ویلیم پاﺅنڈسٹون کا کہنا ہے کہ یہ خیالات غلط ہیں کیونکہ ایسے جوابات 52فیصد درست ہوتے ہیں اور اگر آپ ان جوابات کا انتخاب کریں تو کامیابی کا چانس 90فیصد ہو سکتا ہے۔
ایک ہی نمبر کے جوابات
یہ بات یاد رکھنی چاہیے کہ ایک ہی نمبر یا جز والے جوابات کودہرایا نہیں جاتا۔مثال کے طور پر آپ سوال نمبر دوکاجواب دینے میں دقت کا شکار ہیں لیکن آپ کو یقین ہے کہ کہ سوال نمبر ایک کا جواب ’الف‘اور سوال نمبر تین کا جواب’ج‘ ہے تو جان لیں کہ سوال نمبر دو کا جواب ’الف‘یا’ج‘ نہیں ہوگا۔اس طرح اب آپ کے سامنے دو جواب باقی ہیں اور آپ باآسانی جواب دے سکتے ہیں۔
سب سے لمبے جواب کا انتخاب
ویلیم پاﺅنڈسٹون کا کہنا ہے کہ اکثر دیکھا گیا ہے کہ جو جواب سب سے زیادہ لمبا ہوت ہے وہ درست ہوتا ہے۔اس کا کہنا ہے کہ ٹیسٹ بنانے والے اس بات کو یقینی بنانا چاہتے ہیں کہ صحیح جواب یقینی طور پر درست طرح سے لکھا نظر آئے لہذا یہ آپ کو کافی کامیابی دلا سکتا ہے۔
ایسے جواب جو دوسرے جوابات کے ساتھ مطابقت نہ رکھیں

جوابات میں کچھ ایسے بھی ہوتے ہیں جو باقیوں کے ساتھ مطابقت نہیں رکھتے۔ بالخصوص SATکے امتحانات میں یہ طریقہ آپ کو کافی مدد دے سکتا ہے۔ ویلیم پاﺅنڈسٹون کا کہنا ہے کہ ایسے جواب جو باقی جوابوں کے ساتھ ہم آہنگی نہ رکھیں، انہیں رد کر دینا چاہیے۔

Leave a Reply

Your email address will not be published. Required fields are marked *

You may use these HTML tags and attributes: <a href="" title=""> <abbr title=""> <acronym title=""> <b> <blockquote cite=""> <cite> <code> <del datetime=""> <em> <i> <q cite=""> <strike> <strong>